کورونا وائرس ممکنہ طور پر ’امریکہ میں تیار کیا گیا حیاتیاتی ہتھیار‘ ہو سکتا ہے،ایران

تہران (مانٹرنگ ڈسک )تاریخ شاہد ہے کہ جنگوں اور موذی امراض نے دنیا میں خوب تباہی مچائی ہے مگر کرونا وائرس پر دنیا بھر میں حدشات کا اظہار کیا جا رہا پے چین اور امریکہ ایک دوسرے کو موردالزام ٹھرا رہے ہیں ایران کے رہبرِ اعلیٰ آیت اللہ علی خامنہ ای نے ایران کے ’دشمنوں‘ پر الزام عائد کیا کہ کورونا وائرس ممکنہ طور پر ’امریکہ میں تیار کیا گیا حیاتیاتی ہتھیار‘ ہو سکتا ہے
صدر حسن روحانی بھی رہبرِ اعلیٰ کا مؤقف اپناتے ہوئے دیکھے گئے۔ انھوں نے ’دشمنوں کی تمام سازشوں اور ڈراووں‘ سے خبردار کیا۔ انھوں نے کہا کہ یہ سب ملک کو روک دینے کے لیے کیا جا رہا ہےایران میں تعلیمی ادارے، مساجد اور مدارس بند کر دیے گئے۔ فٹ بال میچز منسوخ کر دیے گئے جبکہ تہران میں جراثیم کش صفائی مہم چلائی جا رہی ہے۔ حکام نے شہریوں کو یہ مشورہ دیا ہے کہ وہ سفر نہ کریں اور زیادہ وقت گھروں پر ہی گزاریں۔ ایران میں 1979 کے اسلامی انقلاب کے بعد پہلی بار جمعے کا خطبہ منسوخ کیا گیا ہے۔

Advertisements
Sponsored by Islamia School and College

حال ہی میں ریاست کے زیرِ کنٹرول ٹی وی پروگرامز میں اعلان کیا گیا کہ کورونا وائرس ممکنہ طور پر ’امریکہ میں تیار کیا گیا حیاتیاتی ہتھیار‘ ہو سکتا ہے۔ رہبرِ اعلیٰ نے بھی ’حیاتیاتی حملے‘ کے بارے میں ٹویٹ کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں