نوانکلی کے رہائشی احمد علی قتل کیس کے ملزمان گرفتار

تھانہ کالوخان(کرائمز رپورٹر) نوانکلی کے رہائشی احمد علی قتل کیس کے ملزمان گرفتار کر لئے گئے.صوابی پولیس کی زبردست کاروائی کرتے ہوئے اندھے قتل کیس کا سراع لگا لیا.احمد علی قتل کیس کے ملزمان گرفتار کر لئے گئے،قاتل نے اعتراف جرم کر لیا.آلہ قتل برامد کر لیا گیا،اسماعیلہ کے رہائشی صالح زمان ولد لائق زمان سکنہ اسماعیلہ نے نو عمر احمد علی کو بے گناہ گولی ماری تھی.. قتل میں بھائی بھی شریک جرم نکلا.اپنے دوست کے ذریعے اُپنے چھوٹے بھائی کو قتل کروایا،21 ستمبر کوتھانہ کالوخان کو اطلاع ملی تھی کہ اتم چوکی کے حدود میں ایک نوجوان کو نا معلوم افراد نے قتل کر کے لاش ویرانے میں پھینک دی ہے نواں کلی کے رہائشی احمد ولد سردار کو کسی نےفون کر کے گھر سے باہر بلایا تھا جو کہ رات گئے تک واپس نہیں آیا تو اُس کے گھر والوں کو فکر لاحق ہوئی اس دوران لاش کی اتم چوکی کے قریب اُس کی شناخت احمد کے نام سے ہوئی تھی جس کو نا معلوم افراد نےاحمد علی کو گولی مار کر قتل کردیا تھا پولیس تھانہ کالوخان نے نامعلوم ملزمان کے حلاف ایف آئی آر درج کر کے جدید ھطاط پرتفتیش شروع کر دی تھی . ڈی پی آو صوابی کے ہدایت پر ڈی ایس پی زرڑ کے انکوائری کیلئے انوسٹیگیش افیسر سید جمیل خان کو تحقیقات کا ٹاسک سونپ دیا تھا ملزمان ٹریسنگ کے بعد گرفتاری کی گئی . گرفتار ملزمان نےقتل کااعتراف کر لیا انوسٹیگیش افیسر سید جمیل خان کی تحقیقات کے بعد تشکیل شدہ ٹیم ایس ایچ او کالوخان سب انسپکٹر خالد اقبال ،تفتیشی آفیسر انسپکٹر سلطان محمود اور بیٹ آفیسر اے ایس آئی آختر علی نے کاروائی کرتے ہوئے ملزم صالح زمان ولد لائق زمان سکنہ اسماعیلہ کو گرفتار کیا دوران تفتیش دوسرے ملزم کا نام اگل دیا جس پر پولیس ٹیم نے کامیاب کاروائی کرتے ہوئے مقتول کا بھائی ملزم محمد اصغر ولد سردار محمد سکنہ نواں کلے کو گرفتار کیاانہوں نے اعتراف جرم قبول کرتے یوئے کہا کہ مقتول بھائی احمد علی کی پلاٹ کی لالچ کے وجہ سے اجرتی قاتل صالح زمان کو 12ہزار روپے اور موٹرسائیکل دینے کا معاہدہ کرکے بھائی کو بہانے پر اجرتی قاتل کے پاس پہنچا کروہاں پر پستول سے فائرنگ کرکے ابدی نیند سلا دی۔آلہ قتل پستول برامد کر لیاگیا

Advertisements
Sponsored by Modern Bakers

اپنا تبصرہ بھیجیں