تمباکو کا نرخ – انورخان

تمباکو ایک نقد آور فصل ہے۔جو کہ صوابی کا حاص کراپ ہے۔۔اس فصل سے ہمارے صوابی کے عوام کے تمام تر معاشی معاملات جھرے ہوتے ہیں شادی بیا ہو،رہن سہن رسم رواج غرض کہ ہر قسم طرز زندگی اس فصل سے وابسطہ ہے تمام فصلات میں سے اس فصل کا آمدن صوبہ اور وفاق کوٹیکس کی مد میں جاتا ہے۔ ریٹ مقرر اس کا ستمبر کے آخر سے 15اکتوبر تک ہوتا ہے۔ٹوبیکو بورڈ جو کہ پشاور حیات آباد میں واقع ہے۔ اپنی ٹیم لیکر ٹوبیکو والے علاقہ میں تمام ڈیووں کے بنجر حضرات PTC+PMIکے موجود گی میں طبع زمینداروں کے تنظیمی عہدیداران کھیتوں اور کنبہ نوں مں زمینداروں سے جو کہ تمباکو کاشت کرتے ہوں سے انٹر جولیتے ہیں اور بورڈ سے آئے ہوئے پرنٹ فارم پر کرتے ہیں طریقہ یہ کہ پکھل (نرسری) سے لیکر خشک بنڈل پیک تک جس پر جتنا خرچ آتا ہو اس کو ایک طرف زمیندار کا خرچہ تعبعد کیا جا تا۔دوسری طرف زمیندار کا صافی آمدن جس میں لیبر۔اندھن کا خرچہ نکالی کرنٹ رقم آکر اس کو صاف رقم کہتے ہیں خرچہ کو آمدن پر تقسیم کر کے تمباکو پر فی کلو صافی خرچہ نکلتا ہے۔جو یہ ظاہر کر تا ہے کہ ہروقت کلو خشک تمباکو پر خرچہ یہ آتا ہے۔جس پر ٹوبیکو مافیا کچھ فیصدی چڑھا کر یہ آنندہ دوسری سال کا ریٹ فی کلو گرام بنتا ہے اور اس طرح یہ سلسلہ سال چلتا رہتا ہے۔90فیصدبھٹی مار اس واقع سے نابلد ہے اور نہ اپنے او ر نہ آپ کو سمجھانے کی کوشش کرتا ہے اور نہ اپنے میں اتفاق و اتحالد پیدا کر نیکی سپرٹ پیدا کرتا ہے۔ زمیندار تنظیم کسان بورڈ صوابی کا ایک وفد سکٹری زراعت محمد اسرار سے ملاقات مورخہ6اکتوبر صوابی سے زمینداروں کا تنظیم کسان بورڈ پشاور میں سیکرٹری زراعت سے تفصیلی ملاقات کی۔ملاقات میں دیگر صوبوں سے آتے ہوئے کاشتکاروں اور زمینداروں نے بھی حصہ لیا۔اس میں ضلع مردان اور ضلع چارسدہ خاص طور پر قابل ذکر ہیں۔سکڑی صاحب جو کہ ایک زمیندار گھرانہ سے تعلق رکھتا ہے۔زراعت سے وابسطہ تمام بورڈز کو موضع پر حاضر کئے گئے تھے۔جو ضرورت پڑنے پر زمینداروں کو ہر وقت جو اب دیں دے۔محکمہ جات میں زراعت،لائیوسٹاک،ماہی فروری خاص طور سے قابل ذکر ہیں۔صوابی سے نمائندگی میں میرے ساتھ خان محمد آف کالو ڈھیر سلمان خان شامل تھے۔ زراعت اور زمینداری پر تفصیلاََ بحث میں حثہ کیا۔اور زمینداروں نے اپنا رونا وریا تمام اضلاع میں زمینداروں کیلئے جو فارم بسریننر سنٹر ٹائم کئے گئے ہیں اس کی کارکردگی سمت پڑ چکی ہے۔حالانکہ اس کیلئے بینک میں خاصافنڈ جمع کیا گیا ہے ہمیں آدھا رقم زمیندار کی جیب سے داخل ہوچکی ہے دیگر اجناس پر بھی خرچہ بہت آتا ہے اور آمدنی بہت کم اور وہاں کنوئین والا مقصدکر کنویں کا مئی کنیوں ہم پر ک جاتا ہے۔زمیندار ایک ازلی اور بد قسمت طبق ہہے جو ہر قوت طوفان،بارش،سیلاب اور ثالہ باری کا سامنا ہوتا ہے۔جس طرح گذشتہ ستمبر میں رونما ہوا۔اس کا کوئی پرسان حال نہیں ہوتا۔سیکرٹری زرات نے بہت اچھے انداز میں داد دی اور زمینداروں کو حوصلہ دیا تمام محکمہ جان کے ہیڈز کو سختی سے زمیندار طبقہ کو نا امید اور اس کے مسائل جلد ازجلد حل کرنے کی سختی سے تاکید کی۔زمینداروں کے اصرار پر گنا شوگر مل مردان کو یکم نومبر سے سٹارٹ کر نیکی استدعا کی جو منظور کی گئی تخم گندم اور تخا مکئی کے متعلق ہی ڈسکشن ہوئی۔نیز امور حیوانات کی بھی زیر بحث لایا گیا کہ تمام مویشی پال حضرات بازار سے علاج کرواتے ہیں۔

Advertisements
Sponsored by Al-Faisal Schools

اپنا تبصرہ بھیجیں